حدیث نمبر 6

زبان کی وجہ سے ہی انسان کو دنیا وآخرت میں رسوائی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ اور پیٹھ پیچھےعیب بیان کرنا ان سب میں نمایاں ہے۔۔۔

حدیث نمبر 5

"قسم ہے اس ذات کی جس کے قبضے میں میری جان ہے تم جنت میں نہ جا سکو گے جب تک مومن نہ ہو جاؤ، مومن نہیں بن سکتے جب تک تم آپس میں میل ملاپ اور محبت نہ رکھو اور کیا میں بتاؤں کہ آپس میں محبت کیسے پیدا ہوگی؟آپس میں سلام کو پھیلاو (رواج دو)۔”

سالگرہ منانا

​”سالگرہ منانا” دنیا کے ہر خطے میں سالگرہ منانا اور اس دن کی مناسبت  سے مبارک باد  پیش کرنے کا تصور  معمول  کی بات ہو گئ ہے.. ،مسلمانوں کی تہذیب  کو قرآن پاک اور سنت مطهرہ کے تحت قائم کیا گیا ہے. اس کی خوبی یہ ہے کہ زندگی کا ہر پہلو سکهایا گیا ہے…

حدیث نمبر 4

"ہردین کی کوئی بنیادی صفت ہوتی ہے جو اس کے ہر پہلو پہ غالب رہتی ہے، اسلام کی صفت جو ہر پہلو پہ غالب ہے وہ "حیا” ہے۔ "

​”   سفر در سفر”

​”   سفر در سفر” جب سے ہوش سنبهالا سفر ہجرت کی داستانیں سننے کو ملتی رہیں . ان داستانوں کا ہی اثر تها شاید کہ خواب بهی سفر کرنے کے ہی آتے رہتے تهے. خوابوں کی نگری کی سیر کرتے کرتے زندگی نے لڑکپن سے ہی پاؤں میں پہیہ بانده دیا.جب ازدواجی زندگی شروع…

عدم اعتراف

تاریخ انسانی میں انسانوں نے جو سب سے بڑاجرم کیا وہ "عدم اعتراف” ہے۔ اور سب سے پہلا جرم الله تعالى کی وحدانیت کا عدم اعتراف ہے۔ الله تعالى کے چنیدہ بندوں کو هادی و راہنما کے طور پہ قبول نہ کرنا بهی انسانی تاریخ کا جرم عظیم رہا۔

حدیث نمبر 3

نماز دراصل الله تعالى کی دعوت پہ لبیک کہتے ہوئے اس سے ملاقات کرنا ہے۔ بچے کو اگر ماں پیار سے بلاتی ہے تو بچے کا ماں کی طرف لپکنا فطری عمل ہے۔ الله سبحانہ و تعالیٰ تو ستر ماؤں سے بھی زیادہ اپنے بندوں پہ رحیم اور شفیق ہے۔ وہ اپنے بندوں پہ رحمت کے دروازے کھولے رکھتا ہے۔ وہ بندے کی ہر پریشانی سے واقف ہے پھر بھی وہ اس سے کہنے کا موقع دینے کو پانچ بار اپنے پاس بلاتا ہے۔۔۔

حدیث نمبر 2

Paakizgi imaan ka laazmi juzw he
Jis tarha zaahiri badan ko wuzoo or ghusl ki zaroorat prti he, isi tarha rooh ko bhi wuzoo or ghusl ki zaroorat prti he.